Share |

وزیراعظم عمران خان کا قوم کے نام نشریاتی پیغام

اسلام آباد ۔اکنامک ایشوز: 21 جون (اے پی پی) وزیراعظم عمران خان نے کرپشن اور ٹیکس چوری کے خاتمے کو حکومت کی اولین ترجیح قرار دیتے ہوئے عوام پر زور دیا ہے کہ ٹیکس ایمنسٹی سکیم سے مقررہ مدت کے دوران بھرپور فائدہ اٹھائیں، کرپشن کرنے والوں کو ہم نہیں چھوڑیں گے لیکن ٹیکس چوری کو ختم کرنے کے لئے عوام کی حمایت کی ضرورت ہے، قوم حکومت کے ساتھ مل کر ملک کو مشکل سے نکالے، ہم نے آئندہ سال ساڑھے پانچ ارب روپے اکٹھے کرنا ہیں، قوم فیصلہ کرے تو ہر سال آٹھ ہزار ارب روپے اکٹھے کر سکتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کو قوم کے نام اپنے نشریاتی پیغام میں کیا۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ بار بار عوام کو بتا چکا ہوں کہ پچھلے 10 سالوں میں پاکستان کا بیرونی قرضہ 6 ہزار ارب سے30 ہزار ارب تک پہنچ چکا ہے، حکومت جتنے محصولات اکٹھے کرتی ہے اس میں آدھے بیرونی قرض کے سود کے لئے ادا کرنے پڑ رہے ہیں، اب بیرونی قرضوں پر سود ادا کرنے کے لئے قرض لے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان اس مقام پر اس لئے پہنچا کہ پاکستان میں کرپشن اور ٹیکس چوری ہے، کرپشن کرنے والوں کو ہم نہیں چھوڑیں گے لیکن ٹیکس چوری کو ختم کرنے کے لئے عوام کی حمایت کی ضرورت ہے۔ ٹیکس چوری کے خلاف عوام حکومت کے ساتھ نہیں ملے گی تو ہم ملک کو اس دلدل سے نہیں نکال سکتے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ایمنسٹی سکیم لائی ہے جس کی مدت 30 جون تک ہے، اس سکیم سے آپ کو تمام اثاثے ظاہر کرنے کا موقع ملتا ہے، یہ پاس اثاثے ظاہر کرنے کا سنہری موقع ہے، وقت ہے کہ قوم حکومت کے ساتھ مل کر فیصلہ کرے اور ملک کو دلدل سے نکالے۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان کی عوام ہر مشکل میں آگے بڑھ کر مدد کرتی ہے، بہت سے مثالیں ہمارے سامنے ہیں، شوکت خانم ہسپتال کا قیام، 2005 زلزلہ، سیلاب اور قدرتی آفات میں سارے پاکستانیوں نے مدد کر کے ملک کو مشکل سے نکالا۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے اگلے سال ساڑھے پانچ ارب روپے اکٹھے کرنا ہیں، قوم فیصلہ کرے تو ہر سال آٹھ ہزار ارب روپے اکٹھے کر سکتے ہیں، ہم اپنے لوگوں کو غربت سے نکال سکتے ہیں اور اپنے بچوں کا مستقبل بہتر کر سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ نہیں چاہتے کہ لوگوں کو کوئی پریشانی ہو، عوام اس سکیم کا فائدہ اٹھائیں اور ملک کو مشکل سے نکالیں۔ انہوں نے کہا کہ ایف بی آر کے پاس مکمل ڈیٹا موجود ہے، عوام الناس ایف بی آر کی معلومات ویب سائٹ پر جانے سے اپنا ڈیٹا دیکھ سکتے ہیں۔

Thank You for visiting Economic Issues Pk.Com